“سوشل میڈیا کا غلط استعمال کیا جارہا ہے ، لوگ حکومت کے اچھے کام کے بارے میں نہیں جانتے”: بہار کے وزیر اعلی نتیش کمار

انڈین ایکسپریس کی رپورٹ کے مطابق، اتوار کے روز بہار کے وزیر اعلی نتیش کمار نے کہا کہ ٹکنالوجی کا غلط استعمال کیا جا رہا ہے اور ان کی حکومت کے ذریعہ کیے گئے اچھے کام عوام تک نہیں پہنچائے جا رہے ہیں۔

ان کا یہ بیان بہار پولیس کی اکونومک آفنسیز یونٹ (ای او یو) کی جانب سے ریاستی حکومت کے خلاف آن لائن “قابل اعتراض اور غیر مہذبانہ تبصرے” کرنے والوں کے خلاف ایک سرکلر انتباہی کارروائی جاری کرنے کے دو دن بعد سامنے آیا ہے۔

سابق وزیراعلیٰ کارپوری ٹھاکر کی یوم پیدائش کے موقع پر منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کمار نے اپنی پارٹی کارکنوں سے کہا کہ وہ اپنی حکومت کے اچھے کام کے بارے میں بات پھیلائیں۔

کمار نے مزید کہا ، “ٹیکنالوجی کو اچھے کے لئے استعمال کیا جانا چاہیے ، لیکن اس کا غلط استعمال کیا جارہا ہے۔ سوشل میڈیا پر اینٹی سوشل کام ہو رہے ہیں۔ یہ نوجوان نسل کو ایک غلط پیغام بھیج رہا ہے۔”

انہوں نے زور دے کر کہا کہ نوجوانوں کو بتایا جائے کہ ماضی میں حالات کیسے تھے ، سڑکوں کے بارے میں، بجلی اور پانی کی فراہمی کی حالت کے بارے میں۔

کمار نے اپوزیشن کو تنقید کا نشانہ بنانے کے لئے سوشل میڈیا پلیٹ فارم استعمال کرنے پر بھی تنقید کی۔

ریاستی حکومت ، ایم ایل اے ، ممبران پارلیمنٹ ، وزرا یا سوشل میڈیا پر عہدیداروں پر تنقید کرنا ایک حالیہ ایگزیکٹو فیصلے کے بعد اب لوگوں کو جیل میں ڈال سکتا ہے۔ نتیش کمار کی انتظامیہ سائبر کرائم کے دائرے میں حکومت اور اس کے کارکنوں کے خلاف افراد یا تنظیموں کے ذریعہ “قابل اعتراض تبصرے” لائی ہے۔ اپوزیشن نے اس اقدام کو آزادانہ تقریر کی روک تھام کے طور پر تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔

یوز 18 نے رپوٹ کیا کہ کمار نے یہ اشارہ بھی کیا کہ انہیں کارپوری کی طرح وسط راستے سے اپنے دفتر سے ہٹا دیا جاسکتا ہے کیونکہ وہ تجربہ کار سماجی رہنما کی طرح معاشرے کے تمام طبقات کی فلاح و بہبود کے لئے کام کر رہے ہیں۔

“کارپوری ٹھاکر جی نے بحیثیت چیف منسٹر معاشرے کے تمام طبقات کی فلاح و بہبود کے لئے کام کیا لیکن انہیں دو سال کے اندر ہی اس عہدے سے ہٹا دیا گیا۔ ہم بھی معاشرے کے تمام طبقات کے مفاد میں کام کر رہے ہیں۔ انہوں نے مزید کہا بعض اوقات کچھ لوگ معاشرے کے تمام طبقات کے مفاد کے لیے کام کرنے سے ناراض ہوجاتے ہیں۔

کارپوری ٹھاکر جنہوں نے پہلے بہار کے وزیر اعلی کی حیثیت سے 1970 میں حلف لیا تھا لیکن انہیں جون 1971 میں چھ ماہ میں سبکدوش ہونا پڑا تھا۔ بعد میں وہ 1977 میں دوبارہ وزیر اعلی بنے لیکن دو سال عہدے پر رہنے کے بعد انہیں ایک بار پھر عہدہ چھوڑنا پڑا۔